’’تلہ گنگ‘‘صدیوں پینے کے پانی کی فراہمی کیلئے بنائی جانیوالی واٹر سپلائی سکیم سرخ فیتہ کا شکار ، ممتاز صحافی زاہد اعوان

0
174
03تلہ گنگ(تحصیل رپورٹر) کونسلر میونسپل کمیٹی تلہ گنگ اور ممتاز صحافی زاہد اعوان نے کہا کہ 2007 سے تلہ گنگ شہر کو پینے کے پانی کی فراہمی کیلئے بنائی جانیوالی واٹر سپلائی سکیم سرخ فیتہ کا شکار کیوں ہوگئی ۔ نو سال کا عرصہ گزر گیا ابھی تک ان پانچ واٹرٹینکوں کو ہینڈ اور تک نہیں کیا گیا ، اور پانی کی فراہمی تلہ گنگ شہر کے شہریوں کو نصیب نہ ہو سکی ۔ اور خرچ ہونیوالے تین کروڑ روپے سے زائد کی رقم محکمہ افسران اور سیاستدانوں کی نااہلی کی وجہ سے برباد ہو رہی ہے۔ ملک زاہد اعوان نے بتایا کہ ان پانچ واٹر ٹینکوں میں کریسچین کالونی ، محلہ چھوئی ، محلہ ٹی ایچ کیو ہسپتال ، جبکہ دو تلہ گنگ شہر میں ہیں اسی طرح فلٹریشن پلانٹ بھی بند پڑے ہیں اور وفاقی حکومت کی خطیر گرانٹ سے بننے والے فلٹریشن پلانٹ کو بند کرکے مجرمانہ غفلت کا ارتکاب کیا جارہا ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر فلٹریشن پلانٹوں کو چالو کیا جائے اور پانچ واٹر ٹینکوں کو بھی استعمال میں لایا جائے ۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں