من چلے نومی چوہدری

0
599

Noman(عدلیہ)
قارئین محترم! اسلام علیکم !عدلیہ کاکام شہریوں کو انصاف مہیا کرنا اوران کے حقوق کی حفاظت کرنا اور ایک حکومت کی عمدگی کا اس کے عدالتی نظام کے حسن کارکردگی سے بہتر اورکوئی مہیار نہیں کسی بھی حکومت کی بہترین کارگردی کا اندازہ اس کے عدالتی نظام سے لگایا جاتا ہے اگر عدلیہ کا نظام بہترین بنیادوں پر استوار ہے اور یہ ادارہ آزادی سے اپنے فرائض کو سرانجام دے رہا ہے تو اس کا مطلب یہی ہے کہ وہاں کے لوگوں کو مکمل آزادی حاصل ہے اور ان کے حقوق کر ہر طرح تحفظ حاصل ہے
قارئین ! زمانہ قدیم میں انصاف کا جو تصور پیش کیاجاتا تھا وہ دور جدید کے تصور انصاف سے بالکل مختلف تھا اور جو سزائیں مجرموں کو دی جاتی تھی وہ اکثر ان کے جرائم کے مقابلے میں بہت شدید ہوتی تھیں اور قبائلی نظام ہونے کی وجہ سے مجرم کو سزا دینے کی زمہ داری بھی قبیلے پر ہی ہوتی تھی ۔قارئین!قدیم باد شاہی کی ذات سے ہی منسلک رکھا گیا تھا وہ جس قسم کی سزا چاہے معاف کر دیتا تھا لیکن وقت گزرے کے ساتھ ساتھ سیاہی نظام میں تبدیلیاں آتی گئیں لوگوں میں حقوق کا تصوراجا گرہوتا گیا اور قانون کی بالادستی کو نظام حکومت کا بنیادی اصول قرار دیاگیا اور عدلیہ کو بھی ایک الگ ادارے کی حیثیت سے قائم کیاگیا جس کے اولین فرائض میں لوگوں کو انصاف مہیا کرنا اوران کے حقو ق کی پاسداری کرنا ہے اور ملک کے تمام شہریوں کے لیے ایک ہی قانون ہوتا تھا قانون کی بالا دستی ہونے کی وجہ سے تمام شہری قانون کی نظر میں یکساں ہوتے تھے اور مجرموں کو ان کے جرائم کی سزا بھی قانون کے مطابق دی جاتی تھیں
قارئین!دور جدید میں سزا کا مفہوم بھی بدل گیا ہے اورآج سزا دینے کا مطلب مجرم سے بدلہ لینا یااس کے خلاف انتقامی کاروائی کرنا نہین بلکہ اس کی شر سے معاشرے کو محفوظ رکھنے کے ساتھ ساتھ مجرم کی اپنی اصلاح بھی تاکہ وہ بھی مستقبل میں معاشرے کا ایک فعال ممبر بن سکے آج کل کچھ حالات ایسے بھی پیداہوگئے ہیں کہ جو شخص امیر گھروں سے تعلق رکھتے ہیں اگر وہ کوئی جرم کریں تو ان کو معاف کردیاجاتا ہے اورجو شخص غریب گھروں سے تعلق رکھتے ہیں ان کو اپنے جرم سے زیادہ سزا دی جاتی ہے اگر اسی طرح یہ نظاچلتا رہا تو ہر سرکاری ادارہ میں غریبوں کا ہی نقصان ہونا ہے میری سرکاری ادارہ سے اپیل کے خدایا انصاف کا تقاضا کریں تاکہ غریبوں کو بھی اپنا حق کا فیصلہ ملے ہم وہ نہی ہیں جو ہمارا دل کرے کیونکہ ہم من چلے ہیں
میری زندگی میر ی ماں ہے

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں