چکوال میں ڈاکٹرز ،ڈسپنسرز ،ایل ایچ ویز اور دیگر عملے نے پی آر ایس پی کے خاتمے کے خلاف احتجاجی مظاہرے

0
99
1تلہ گنگ(تحصیل رپورٹر)ضلع بھر کے بنیادی مراکز صحت پر تعینات ڈاکٹرز ،ڈسپنسرز ،ایل ایچ ویز اور دیگر عملے نے پی آر ایس پی کے خاتمے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ تحصیل چوک اور بعد ازاں پریس کلب کے باہر دھرنا بھی دیا۔ احتجاجی مظاہرے کی قیادت ایگزیکٹو مانیٹرنگ محمد خان ،رانا علی رضا ،ابرار حسین ،مدثر شفیق اور دیگر کر رہے تھے۔ مظاہرین نے پہلے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال چکوال کی ایمرجنسی کے باہر احتجاج کیا۔ بعدازاں تحصیل چوک پر پہنچے جہاں مطالبات کے حق میں نعرہ بازی کی اور احتجاجی دھرنا دیا۔ مظاہرین بعدازاں پنوال روڈ سے ہوتے ہوئے پریس کلب کے باہر پہنچے جہاں پر انہوں نے نعرہ بازی کی۔ جبکہ ایل ایچ ویز اور نرسوں نے یہاں پر احتجاجی دھرنا دیا۔ محمد خان اور رانا علی رضا نے اپنے خطاب میں اعلان کیا کہ حکومت پنجاب کی طرف سے پنجاب رورل سپورٹ پروگرام جو کہ تیس جون سے بند کیا جا رہا ہے وہ بنیادی مراکز صحت کا چارج نہیں چھوڑیں گے اور نہ ہی زبردستی تالے لگانے دیں گے۔ مقررین کا کہنا تھا کہ حکومت پنجاب بجائے اس کے کہ بارہ سالوں سے قربانیاں دینے والے ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف جن کی بدولت بھوت بنگلوں کو علاج گاہوں میں تبدیل کیاگیا کی قربانیوں کا صلہ دینے کی بجائے انہیں بے روزگار کر رہی ہے جو کہ کسی صورت میں قابل قبول نہیں۔ اس موقع پر مظاہرین نے اعلان کیا کہ وہ 21اپریل کو پنجاب اسمبلی کے باہر احتجاجی دھرنا دینگے۔ جس میں صوبہ بھر سے سات ہزار سے زائد ڈاکٹرز، لیڈی ڈاکٹرز اور دیگر سٹاف شرکت کرینگے۔ اس موقع پر متعدد قراردادیں بھی منظور کی گئیں۔ جس میں مطالبہ کیا گیا کہ بنیادی مراکز صحت میں پی آر ایس پی کی فل آسامیوں پر دئیے گئے اشتہارات واپس لینے ،پی آر ایس پی ملازمین کو ریگولر کرنے کے مطالبات شامل تھے۔مظاہرین نے دھمکی دی کہ اگر ان کے مطالبات تسلیم نہ کیے گئے تو پولیو مہم اور محکمہ صحت کی دیگر تمام مہم کا بائیکاٹ کیا جائیگا۔ بی ایچ یوز کو تالے لگا دئیے جائیں گے۔ جگہ جگہ ہڑتالی کیمپ، بھوک ہڑتال، احتجاجی دھرنے اور دیگر احتجاجی پروگرام تشکیل دئیے جائیں گے۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں