تلہ گنگ کے حلقہ این اے 61چکوال 2خطرے کی گھنٹی بج گئی پی ٹی آئی اور ق لیگ کی مقبولیت میں اضافہ مسلم لیگ کی سیٹ کو خطرہ،۔۔۔۔

0
457
Untitled-1تحریر :ارسلان احمد ملک حلقہ این اے 61چکوال 2سے مسلم لیگ ن کا بینک ووٹ کافی حد تک گر گیا دن بدن مزید گرتا ہی جا رہاہے رکنے کا نام نہیں لیتا جبکہ اس کے مد مقابل پی ٹی آئی اور ق لیگ کا بینک ووٹ میں کافی حد تک اضافہ دن بدن مقبولیت کا پیرا گراف اڑنے لگا ڈیلی تلہ گنگ نیوز نے اس کی تحقیقات کی اور ہر زاویے سے دیکھا گیا کہ حلقہ این اے 61مسلم لیگ ن کا گڑھ تھا اور عوام کا موڈ کیوں بدل گیا اور دن بدن بینک ووٹ کیوں گرنا شروع ہوا شائد آمدہ الیکشن میں ن لیگ کو اس حلقے سے سیٹ حاصل کرنے میں دشواریاں کے علاوہ سیٹ خطرے سے بھی خالی نہیں اس کی کئی وجوہات میرے سامنے آئی ہیں سب سے بڑی وجہ چار سال مقامی ایم این اے او ر ایم پی ایز اور مقامی قیادت نے عوام کے مسائل پر کوئی توجہ نہیں دی سیر سپاٹوں اور عیاشیوں اور آپس کی لڑائی جھگڑوں میں چار سال گزار دئیے جس کا فائدہ پی ٹی آئی اور ق لیگ کو ہوا اور مزید ہوتا نظر آرہاہے اور سب سے بڑی وجہ جو سامنے آئی ہے وہ’’ ضلع تلہ گنگ ‘‘چار سال گزر گئے مگر کسی بھی ایم این اے ایم پی اے نے ’’ ضلع تلہ گنگ ‘‘ کی طرف کوئی توجہ نہیں دی اور تلہ گنگ کا میڈیا تلہ گنگ کے چندصحافیوں نے بھی ضلع تلہ گنگ کیلئے مقامی ایم این اے ایم پی اے سے کوئی بات پرس نہ کی صرف پالشی خبریں لگا کر خوش رکھا عوام کی دلی خواہش اور درینہ مطالبہ’’ ضلع تلہ گنگ ‘‘ کے لئے کوئی خاطر خواہ اپنے چند لوکل اخبارات میں نہ اٹھایا بات پریس کانفرنسوں اور کارنگ میٹوں اور چند روڈوں کے افتتاح پر بھی چند صحافیوں نے کوئی سوالات نہیں کئے کہ ضلع کا معاملہ کہاں پہنچا کہاں لٹکا ہوا ہے کب حل ہو گا عوام کا بھی موڈ بدلہ بدلہ نظر آرہا ہے گذشتہ بلدیاتی الیکشن میں بھی موجودہ ایم این اے ایم پی اے کو اپنی ووٹ کی پرچی سے انتقام کا بدلہ لیا جیسے جیسے الیکشن قریب آرہے ہیں ایم این اے ایم پی اے دوبارہ عوام کی ہمدردیاں حاصل کرنے کیلئے نزدیک نزدیک آنے لگے ہیں مگر عوام نے بھی اندر اندر سے فیصلہ کر لیا ہے اس چار سال عرصہ کے دوران مسلم لیگ ن کی قیادت سے مقامی ایم این ایم پی اے نے کوئی بڑے منصوبے کا افتتاح نہ کروا سکے چھوٹی چھوٹی گرانٹ لی اس میں بھی کرپشن من پسند ٹھیکداروں کو ٹھیکے دئیے گئے ڈیلی تلہ گنگ نیوز تحقیقاتی کے مطابق درجہ چہارم میں ٹیچر کی بھرتیوں کا سلسلہ جاری ہونے کا امکان ہے جس میں ایم این اے ایم پی اے اپنے من پسند کو ایجسٹ کروانے کی کوشش کریں گے آمدہ الیکشن میں مسلم لیگ ن کے خطرے کی گھنٹی بج گئی حالیہ منصور حیات ٹمن کے بیان کو نیوز ویب سائیٹ پر59عوام نے لائک کیا جبکہ 4نے شئیر کیا اور فیس بک پر 28نے لائک کیا۔اس سے ثابت ہو جاتا ہے کہ پی ٹی آئی کی اس حلقہ میں دن بدن گرفت مضبوط ہو تی جا رہی ہے ثبوت ساتھ لف ہیں تاکہ کوئی شک و شبات کی گنجائش نہ رہ جائے ۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں