’’تلہ گنگ‘‘پانامہ لیکس ملک دشمن ممالک اور قوتوں کی سازش ہے غلام صدیق ملک

0
140
4تلہ گنگ(تحصیل رپورٹر)تحریک نجات کے مرکزی رہنما ڈنمارک ناروے اور سویڈن چیف آرگنائزر و صدرمسلم لیگ ن کے صدر غلام صدیق ملک نے کہا ہے کہ پانامہ لیکس ملک دشمن ممالک اور قوتوں کی سازش ہے اور یہ قوتیں دراصل پاکستان کو غیر مستحکم دیکھنا چاہتی ہے۔ بدقسمتی سے میاں نواز شریف جب بھی برسراقتدار آئے ان قوتوں نے سازشیں شروع کر دیں۔پاکستان کی تباہی کا سازوسامان تیار کرنے والوں کو اپنی کوششوں میں ناکامی ہوگی۔ وہ ہائی وے ریسٹ ہاؤس چکوال میں مسلم لیگ ن کی قربانیاں دینے والے کارکنوں سے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت کر رہے تھے۔ اس موقع پر مسلم لیگ ن مڈ لینڈ کے صدر چوہدری عارف اقبال، مسلم یوتھ ونگ ضلع چکوال کے سینئر نائب صدر سیٹھ محمد عرفان، نائب صدر تحصیل چوہدری ناصر اقبال آف تھنیل فتوحی، وائس چیئرمین بیت المال ڈاکٹر اعجاز مغل اور انجمن طلباء اسلام کے رہنما غلام مصطفی تبسم بھی موجود تھے۔ غلام صدیق ملک کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے دورحکومت میں ملک نے تاریخی ترقی کی۔ جس کی وجہ سے انہیں سازشوں کا سامنا کرناپڑ رہا ہے۔ جب بھی حکومت کچھ کرنا چاہتی ہے دھرنے شروع ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا پانامہ لیکس یورپین اور امریکن ممالک کی گہری سازش ہے۔ اور یہ وہ قوتیں ہیں جو پاکستان کو پھلتا پھولتا نہیں دیکھنا چاہتیں۔ جب بھی پاکستان ترقی کی راہ پر چلنا شروع کرتا ہے یہ قوتیں سازشیں شروع کر دیتی ہیں۔ نواز شریف کی اب کی بار تیسری دفعہ حکومت آئی ہے اور تینوں دفعہ ان کے خلاف سازشیں کی گئیں۔اب کی بار پانامہ لیکس کی سازش کی گئی مگر ہم سلام پیش کرتے ہیں کہ شریف برادران کے حوصلے پست نہیں ہوئے ۔حالانکہ پانامہ لیکس میں 240سے زائد سیاستدانوں اور بیوروکریٹس کے نام شامل ہیں۔ غلام صدیق ملک کا یہ بھی کہنا تھا کہ یورپین ممالک میں کاروبار کرنا کوئی جرم قرار نہیں پاتا انہوں نے کہا کہ وہ جلد عمران خان کے کرتوتوں کا پول کھولیں گے۔ غلام صدیق ملک کا یہ بھی کہنا تھا کہ عمران خان نے ڈنمارک سے بہت سارا پیسہ اکٹھا کیا دیگر ممالک سے بھی اربوں روپے اکٹھے کیے مگر آج تک کبھی آڈٹ نہیں کروایا۔ کوئی آڈٹ رپورٹ یہ نہیں بتاتی کہ موصوف نے کن کن ممالک سے پیسے اکٹھے کیے اور کہاں خرچ کیے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی عوام میا ں محمد نواز شریف کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑی ہے اور ان کے حوصلے پست نہیں ہونے دیگی۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں