’’تلہ گنگ‘‘سیاسی مداخلت کے باعث تاحال ٹیچر کا تبادلہ پالیسی پر عملدار نہ ہو سکا۔۔۔

0
116

3

تلہ گنگ(تحصیل رپورٹر)سیاسی مداخلت کے باعث تاحال ٹیچرز تبادلہ پالیسی پر عملدر آمد نہ ہو سکا ،ٹیچرز میں بے چینی،تعلیمی سرگرمیاں معطل ہو کر رہ گئیں ۔تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ پنجاب ایجو کیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے 27جولائی کو ٹیچرز تبادلہ کی پالیسی کا نوٹفیکیشن جاری ہوا ۔جس کے مطابق 27جولائی سے 13اگست تک ٹیچرز سے اُن کے من پسند اسٹیشنز پر تبادلوں کی درخواستیں جمع کرانے کو کہا گیا۔13اگست سے23اگست تک ان درخواستوں کی جانچ پڑتال مکمل کر کے میرٹ لسٹیں باقاعدہ آویزاں کی جانی تھیں ۔24اگست سے 27اگست تک تبادلوں کے احکامات جاری ہونے تھے اور27اگست سے 31اگست تک تبدیل ہونے والے ٹیچرز نے اپنے اپنے اسٹیشنز پر اپنی ڈیوٹیاں سنبھال لینی تھیں ۔تاہم مقامی سیاست دانوں اور ان کے کارندوں نے محکمہ کے حکام پر دباؤ ڈالنا شروع کر دیا کہ تبادلے اُن کی مرضی سے ہونگے اور اس ضمن میں میرٹ لسٹیں آویزاں بھی نہیں کرنی مبادا کوئی فریق عدالت نہ چلا جائے ۔سیاسی مداخلت سے یوں اب تک نہ تو میرٹ لسٹیں آویزاں ہو سکیں اور نہ ہی ٹیچرز کے تبادلوں کے کوئی سرکاری احکامات جا ری ہو سکے۔اس صورتحال میں ٹیچرز میں شدید بے چینی پھیلی ہوئی ہے اور تعلیمی سرگرمیاں معطل ہو کر رہ گئی ہیں ۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں