میرا شریف کے ایک پیارے ساتھی کے نام۔۔۔

0
250

1

اسلام آباد(ارسلان احمد ملک)سانحہ ڈہوک پھلی سے پہلے میں میرا شریف کے ایک پیارا ساتھی جس کو میرے بھائی نے بلاک کر دیا ہے میں اس سے بھی معذرت خواہ ہوں معزز قائرین اور میرے غیور عوام اور قابل احترام ساتھیوں اور بہنوں اور بھائیوں جب میں نے دسمبر 2010میں یہ کا شروع کیا جو شروع کرنے سے پہلے میں نے کچھ رولز ریگولیشن اور پالیسیاں بنائی تھیں اس میں یہ شق بلکل واضع ہے کہ کسی کو بلاک نہیں کیا جائے گا کسی خبر کو کسی بھی سیاسی دباؤ یا حکومت کے دباؤ یا کسی ساتھی یا ری دوستی کی وجہ سے خبرکو ڈلیٹ نہیں کیا جائے گا اور کسی کمنٹس کو کو معزز قائرین اور عوام کا حق ہے اس کو ڈلیٹ نہیں کیا جائے گا لیکن سانحہ ڈہوک پھلی کے دوران ہم اپنے ایک پیارے ساتھی غلام محیی الدین میرا شریف کے کمنٹس بھی ڈیلٹ کیئے اور ان کو بلاک بھی کیامیرے بھائی شہزاد نے یہ کام کیا ہے جب میں نے شہزاد سے پوچھا تو اس نے مجھے حقیقت اور سچائی بتائی کہ بھائی ایک بات بلکل واضع تھی ا س کے باوجود ایک گروپ کی شکل میں ایک بات کلیر کٹ تھی اور حقیقت تھی اور اس پر بھی ذاتی عداوت کی بنیاد پر جھوٹے کمنٹس اور عوام کو ورغلایا جا رہا تھا اور وڈیرہ شاہی جاگیر داری نظام افسر شاہی کو پروان چڑھانے جاننے کے باوجود بھی عوام کو بجائے سیدھی راستہ دیکھانے کے الٹا عوام کو ورغلا یا جا رہا تھا جس کی وجہ سے میں نے اس کے کمنٹس بھی ڈیلٹ کیئے اور ان کو بلاک بھی کیا میرے محترم اور میرے غور ساتھی غلام محیی الدین صاحب ہمیں صحافت کا کوئی شوق نہیں اور نہ ہم صحافی بننا چاہتے ہیں ہم دونوں بھائی دن رات ایک ہی ہمارا میشن ہے ایک ہی ہمارا مقصد ہے ایک ہی ہمارا ماٹو ہے اور انشا اللہ اس سال نہیں تو اگلے سال ضرور ہم اس نیک میشن میں کامیاب ہو جائیں گے ہمیں اپنے اللہ پاک اور عوام کی دعائیوں پر یقین ہے کہ محنت کا پھل اللہ پاک دیتا ہے اور وہ پھل میٹھا بھی ہوتا ہے اور مین مانتا ہوں کہ پورے ملک میں وڈیرہ شاہی ہے لیکن میرا شریف میں کچھ زیادہ ہی وڈیرہ شاہی ہے میرا گھر ڈہوک پھلی سے میر اشریف چند قدموں پر واقعہ ہے اگر اللہ پاک نے مجھے اور میرے بھائی کو اس صلاحیتوں سے نواز رکھا ہے تو کیوں نہ ہم یہ صلاحیتیں اپنے ملک اپنی پیاری قوم کیلئے کچھ ٹائم روزانہ وقف کر دیں تو کوئی قیامت برپا نہیں ہو گی بجائے کہ ہم فضول گلی بازاروں مین کھلیں کودیں اور غلط محفلوں میں چلے جائیں جس سے ہمارا آمدہ مستقبل بھی تباہ ہو جائے جس طرح ہماری تعلیم و تریب ہے کل ہمارے والدین پر ہاتھ اٹھ جائے کہ ارسلان اور شہزاد ایک جاہل اور انپڑھ ذہنیت کے مالک ہیں اس لیئے میری والد اور والد ہ کی کوشش رہتی ہے کہ اچھی تربیت ہے ہمیں کوئی نام کمانے کا شوق نہیں آج بھی آپ تلہ گنگ ٹائمز سے رابطہ کریں وہاں ہمارا گفٹ پڑا ہے تلہ گنگ میں ایک بہت بڑا فنگنش ہوا تھا جس میں ایک نام ور اور پاکستان کی معروف شخصیت نے ڈیلی تلہ گنگ نیوز کی کوششوں کو بھی سرہاہا اور ارسلان اور شہزاد کیلئے خصوصی گفٹ کا بھی اعلان کیا لیکن آج تک وہ ہم گفٹ بھی لینے نہیں جا سکیاگر آپ کے کوئی دل میں میل ہو تو میں معذرت چاہتا ہوں میرے محترم ساتھی ایسا نہیں ہوتا اللہ پاک دیکھ رہا ہے میں اور میرے بھائی کی نیت صاف ہے ہم آپ کیلئے تو کر رہے ہیں میرا شریف غیو رعوام کیلئے تو کر رہے ہیں میرا شریف کو میں اپنا دوسرا گھر سمجھتا ہوں لیکن میرا شریف میں جتنی وڈیرہ شاہی اور آج بھی میرا شریف تاریخی گاؤں ہونے کی وجہ سے بھی ہی عوام بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں آخر کیوں ایسا نہیں ہونا چاہئے چند جاگیر دار مافیہ کا قبضہ ہے انشا اللہ یہ مافیہ قبضہ ختم کر کے ہی دم لوں گا

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں