ایشیاء کا سب سے بڑا قصبہ لاوہ مسائلستان بن گیا۔۔

0
187
lawa1لاوہ(حفیظ اﷲ ملک) عوامی نمائندوں کی غفلت، ایشیاء کا سب سے بڑا قصبہ لاوہ مسائلستان بن گیا، گلیاں کھنڈرات، بیروزگاری عروج پر، تحصیل آدھا تیتر آدھا بٹیربن گئی۔تفصیلات کے مطابق ایشیاء کا سب سے بڑا قصبہ لاوہ جس کی سرحدیں تین اضلاع میانوالی، خوشاب اور اٹک سے ملتی ہیں اور آبادی تقریباً سوا لاکھ ہے ۔لاوہ کی مٹی نے ملک و قوم کو وہ سپوت دئے جنہوں نے وعسکری و سول سروسزسمیت سیاست میں نام کمایا ۔لیکن بدقسمتی سے لاوہ شہر کی حالت نہ بدل سکی۔ان ناموں میں جنرل شیر بہادر مرحوم، جنرل ضیاء الحق مرحوم کے مجلس شوریٰ کے ممبر یارن خان ایس پی مرحوم،ملک الطاف مرحوم ایم پی اے، ضلع کونسل چکوال کے چیئرمین انچارج ملک بابا نورخان مرحوم،ان کے صاحبزادے ملک فتح خان ڈائریکٹر این آر ایس پی اور ملک لعل خان سابق ناظم ، ملک خان بیگ سابق آئی جی پنجاب،ملک مہرخان ستارہ ہلال پٹرولیم،نوابزادہ ملک زاہد مبارز،ڈاکٹر ملک محمد نواز نوشیری خیل سابق ڈائریکٹر محکمہ زراعت شامل ہیں۔لیکن لاوہ کی قسمت نہ بدل سکی ۔علاقہ بھر میں کوئی فیکٹری کارخانہ نہ ہونے کے باعث بیروزگاری کا جن بوتل سے باہر ہے ۔تعلیم یافتہ نوجوان ذہنی طور پر مفلوج ہوچکے ہیں۔دیگر امور سمیت شہر بھر کی گلیوں کی حالت انتہائی شکستہ ہے۔لاوہ کو گزشتہ چار سال سے تحصیل کا درجہ مل چکا ہے مگر تاحال مستقل اسسٹنٹ کمشنر تعینات نہ ہو سکا اور ڈی ایس پی،سول کورٹ، مستقل تحصیلدار سمیت کئی اہم امور توجہ طلب ہیں اس لیئے تحصیل لاوہ آدھا تیتر اور آدھا بٹیر کا منظر پیش کر رہی ہے۔عوامی و سماجی حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب اور ممبران صوبائی و قومی اسمبلی سے تحصیل لاوہ کے تمام توجہ طلب مسائل ہنگامی بنیادوں پر حل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں