سیاستدانوں کی بے حسی، تلہ گنگ اور لاوہ کے علاقوں میں پسماندگی کا راج۔۔۔

0
184

we2اسلام آباد( شہزاد احمد ملک) تلہ گنگ اور لاوہ کے آج بھی ایسے ایسے پسماندہ گاؤں موجود ہیں جن میں بنیادی سہولتوں کا فقدان ہے عوام جہالت اور مفلسی کی زندگی گزارنے پر مجبور، انتظامیہ اور سیاستدانوں کو الیکشن مہم کے بغیر یہ علاقے اور عوام نظر آتے ہیں بعد میں رخ تک نہیں کرتے اقتدار حاصل کرنے کے بعد لاکھوں روپے ماہانہ تنخواہ اور پروٹوکول اور مراعات لیتے رہتے ہیں لیکن ان عوام کو کوئی خیال نہیں ہوتا جن کے ووٹوں سے یہ منتخب ہو کر اسمبلی میں عیاشی کرتے ہیں اور تلہ گنگ کے عوا م کیلئے ایک لفظ بھی منہ سے نہیں نکلتا یہ وڈیرا شاہی جاگیرداری نظام نہیں ہے تو اور کیا ہے تفصیلات کے مطابق تحصیل لاوہ کا علاقہ گوہل پچنند، لیٹی، ڈھرنال، سوسکا ڈبہ، خوشحال گڑھ اور لاوہ شہر اور دیگر موضعات شامل ہیں جبکہ تلہ گنگ، نرھگی، ڈھوک پھلی، جبی شاہ دلاور، ڈھوک پٹھان، کوٹیڑہ، بڈھیال، سنگوالہ، نکہ کہوٹ، پیڑہ فتحیال، موگلہ، دھولر، شاہ محمد والی اور دیگر علاقے بھی بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں صفائی کی حالت انتہائی ناگفتہ بہ ہے ٹوٹی پھوٹی سڑکوں اور گلیوں کی وجہ سے علاقے ویرانے کا منظر پیش کرتے ہیں پورا پورا دن بجلی غائب رہتی ہے اور عوام کیلئے علاج معالجے کی بھی کوئی خاص سہولت نہیں ہے ہسپتال برائے نام ہیں ان علاقوں کے عوام نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ہم بھی ووٹ دیتے ہیں ہمارے علاقوں پر بھی توجہ دی جائے۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں