کیا چند نام نہاد صحافی بھی سٹی ہسپتال کا چکر لگاتے ہیں۔۔

0
104

5

زیر نظر تصویر سٹی ہسپتال تلہ گنگ کی ہے تصویر میں واضح نظر آرہا ہے کہ ہسپتال کے وارڈ میں جو بیڈ پڑے ہیں وہ ٹوٹے پھوٹے اور ان کے بستر پھٹ چکے ہیں ایسا لگتا ہے جیسے علاقہ غیر کے ہسپتال کی ہو یہ ہسپتال چوہدری پرویز الٰہی کے دور میں حافظ عمار یاسر کی کوششوں سے بنا اور انتہائی بہترین ہسپتال بنا لیکن تلہ گنگ کے سیاستدانوں اور ہسپتال انتظامیہ نے اس کا ستیاناس کر دیا میں صحافی تو نہیں ہوں دو تحریکوں ڈیلی تلہ گنگ نیوز اور اٹک اپ ڈیٹ کا بانی ہوں جو رواں دواں ہیں لیکن میں عوام سے پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا چند نام نہاد صحافیوں نے کبھی تلہ گنگ سٹی ہسپتال کی حالت زار کو اپنی خبروں یا تصویروں کے ذریعے اجاگر کیا ہے کیا چند نام نہاد صحافی کبھی بھی سٹی ہسپتال میں نہیں گئے یہ سوال عوام ان نام نہاد صحافیوں سے پوچھ لیں۔۔ یہ فیصلہ میں عوام پر چھوڑتا ہوں۔ تحریر: ارسلان احمد ملک، فوٹو ڈیلی تلہ گنگ نیوز اینڈ اٹک اپ ڈیٹ

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں