عمار یاسر کی کاوشیں اور تلہ گنگ انتظامیہ کی مہربانیاں۔۔۔

0
73
dailynewsزیر نظر تصویر سٹی ہسپتال تلہ گنگ کی ہے تصویر میں صاف نظر آرہا ہے کہ ایک ایمبولینس کھڑی ہے جس پر چپہ چپہ مٹی جمی ہوئی ہے اور ٹائر بیٹھ گئے ہیں پچھلی حکومت نے عوام کی بھلائی کیلئے ایک ادارہ ریسکیو 1122بنایا لیکن موجودہ نمائندے اور اہلکار اس کی املاک کو تباہ کر رہے ہیں تصویر میں واضح نظر آرہا ہے کہ گاڑی کے پیچھے گندگی کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں یہ کسی فلتھ ڈپو کا منظر نہیں بلکہ سٹی ہسپتال تلہ گنگ کا اندرونی منظر ہے یہاں ڈی سی اواور اسسٹنٹ کمشنر بھی وزٹ کر چکے ہیں اور چند نام نہاد صحافی بھی آتے رہتے ہیں لیکن مجال ہے کہ کوئی قومی املاک کی تباہی کے بارے میں بھی بولے۔نہ بولنے کی بھی وجوہات ہیں یاری دوستیاں اور سفارشیں جو چند نام نہاد صحافی کرتے رہتے ہیں ہسپتال کا پارکنگ ٹھیکہ تین لاکھ ہے ان پیسوں سے بھی ہسپتال کی صفائی اور ایمبولینس کی مرمت نہیں ہو سکتی یہ سوال ہم عوام پر چھ13162ڑتے ہیں۔ تحریر: ارسلان احمد ملک، فوٹو: ڈیلی تلہ گنگ نیوز اینڈ اٹک اپڈیٹ

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں