تلاشی نہ دینے پر پیارے پاکستان کو اربوں روپے کا نقصان ہوا اس کا ذمہ دار۔۔۔

0
288
a2اسلام آباد( ارسلان احمد ملک) حالیہ پاکستان تحریک انصاف کا دھرنا مختلف عوام کی رائے جو ڈیلی تلہ گنگ نیوز نے تیار کی ہے وہ معزز قارئین تک پہنچائی جا رہی ہیں۔ معزز قارئین اور غیور عوام حالیہ پی ٹی آئی کے دھرنے میں ہم نے مختلف علاقوں کے لوگوں سے رائے لی اور رپورٹس بھی ہمیں موصول ہوئیں پی ٹی آئی کا جو دھرنا تھا بعض لوگوں کا یہ خیال تھا کہ یہ دھرنا ٹھیک نہیں تھا لیکن اکثریت نے یہ فیصلہ دیا کہ یہ دھرنا بالکل صحیح تھا اور پی ٹی آئی آج سے نہیں کئی ماہ سے یہی مطالبہ کر رہی تھی کہ تلاشی دو تو وزیراعظم یا اس کے فیملی آخر تلاشی سے کیوں گھبرا رہے تھے میں یہاں ایک بات واضح کر دوں کہ حکومت نے جو بھی کیا وہ غلط کیا آنسو گیس، شیلنگ معزز شہریوں پر برسائے اور وہ کون تھے وہ معزز پاکستانی ہی تھے وہ کوئی ملک دشمن تو نہیں تھا بلوچستان نے جب دھمکی دی کہ ہم علیحدگی کا نعرہ لیکن پاک افواج نے اس چیز کو جس انداز میں کنٹرول کیا ہتھیار ڈلوائے میں پاک فوج کو سلام پیش کرتا ہوں کم عقل حکومت اور اس کے قریب ترین وزراء کو یہ بات کیوں سمجھ نہیں آتی کہ اگر پختونخواہ میں یہ نعرہ لگ جاتا جس طرح یہ شیل اور گولیاں پھینک رہے تھے اور وہ بھی صوابی کے مقام پر جو خیبر پختونخواہ کی حدود تھی نہ ان کے پاس کوئی اسلحہ تھا نہ چھری تھی نہ چاقو تھے ہاں اگر وہ اسلام آباد آجاتے کوئی توڑ پھوڑ کرتے تو حکومت کو اس وقت ایکشن لینا چاہئے تھا وزیراعظم ہو یا اس کے وزراء ہوں تلاشی دینے میں کیا حرج ہے جب غریب کا بچہ پکڑا جاتا ہے تو پولیس اس طرح تلاشی لیتی ہے کہ اس کی جیب میں اگر سو پچاس روپے ہو وہ بھی لے لیتی ہے اور اوپر سے ایک چھوٹا سا ٹکڑا چرس کا ڈال کر اس کے اوپر ایک اور دفعہ اپنے آقاؤں کو خوش کرنے کیلئے لگا دیتی ہے معزز قارئین میں پاکستان تحریک انصاف کی طرف داری نہیں کررہابلکہ اصل حقائق آپ کے سامنے بیان کر رہا ہوں مختلف لوگوں سے رائے لی مختلف رپورٹس ملی حکومتی لیول سے بھی مجھے رپورٹس موصول ہوتی رہی کہ وزیراعظم پاکستان یا اس کی فیملی کو تلاشی دینے میں کیا حرج ہے اپنی تلاشی دے ہیرو بن جائے میں نے تمام رپورٹس کو مدنظر رکھتے ہوئے سوچا کہ وزیراعظم کو استعفیٰ دیدینا چاہئے اور اپنے آپ کو کلےئر کر دینا چاہئے تاکہ وہ ایک ہیرو کے طور پر ابھریں اور پی ٹی آئی کو ایسا جواب دیا جائے کہ ان کے منہ لٹک جائیں لیکن ایسا کیوں نہیں ہو رہا ہے کہ دال میں کچھ کالا کالا تو ہے اب وزیراعظم جب مشرف نے ٹیک اوور کیا تو دس سال کیلئے معاہدہ کرکے باہر چلے گئے یہ آئین میں کہاں لکھا ہوا ہے آج صبح جب مجھے پیپلزپارٹی کے ایک رہنما نے ٹیلیفون بھی کیا اور ایس ایم ایس بھی کئے کہ اب بلاول بھٹو زرداری بھی میدان میں آگیا اس نے بھی کہا کہ شیر کو قربانی دینا پڑے گی اب ظاہر ہے ساری رپورٹس کو مدنظر رکھا جائے تو مسلم لیگ (ن) پر ہاتھ اٹھ گیااس کا مطلب ہے کہ چور ہے تبھی لوگ کہہ رہے ہیں پیپلزپارٹی اور جماعت اسلامی بھی کہہ رہی ہے اور دیگر جماعتیں بھی یہی کہہ رہی ہیں اب بلاول بھٹو بھی میدان میں آگئے ہیں اگر وزیراعظم تلاشی پہلے دیدیتے تو ملک کے ایسے حالات ہی نہ ہوتے اب جتنا بھی اس دوران ملک کو نقصان ہوا آمدورفت بند کی گئی سبزی منڈی میں سبزیوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کر رہی ہیں کنٹینرز روکے گئے اگر آج ٹماٹر آسمانوں سے باتیں کر رہے ہیں روزمرہ اشیائے ضروریہ کی قیمتیں آسمانوں سے باتیں کر رہی ہیں۔

تبصرے

شیئر کریں

کوئی تبصرہ نہیں

جواب چھوڑ دیں